تعلیمی شعبے کو بجٹ مختص کرنے میں تاریخی اضافہ۔

تعلیمی شعبے کو بجٹ مختص کرنے میں تاریخی اضافہ۔
  • June 10, 2024
  • 59

تعلیم کے شعبے کی ترقی کے لیے وفاقی حکومت نے اتوار کو بجٹ مختص کرنے میں ریکارڈ اضافے کا اعلان کیا۔

جیسا کہ پلاننگ کمیشن نے اعلان کیا ہے، تعلیمی شعبے کے لیے بجٹ 2024-25 کے لیے 20.25 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

گزشتہ سال پبلک سیکٹر کے ترقیاتی پروگراموں کے لیے مجموعی طور پر 8.5 بلین روپے مختص کیے گئے تھے جو کہ رواں سال کے بجٹ میں 140 فیصد کے نمایاں اضافے کی نشاندہی کرتے ہیں۔

بجٹ میں مختص رقم میں اضافے نے رواں مالی سال کے دوران وفاقی وزارت تعلیم کی جانب سے کئی نئے پروگراموں کے آغاز کی راہ ہموار کردی ہے۔

تاہم بجٹ میں یہ حیران کن اضافہ وفاقی وزارت کی جانب سے کئی نئے پروگرام شروع کرنے کی وجہ سے ہوا۔

اس سے قبل ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) کا بجٹ مالی سال 2024-25 کے لیے 65 ارب روپے پر بحال کر دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خزانہ نے ایچ ای سی کے مالی سال 2024-25 کے بجٹ میں 40 ارب روپے کی کٹوتی کے حکم نامے پر نظرثانی کرتے ہوئے بجٹ کو بحال کردیا۔

اس سال کے شروع میں ایچ ای سی کا بجٹ 65 ارب روپے سے کم کر کے محض 25 ارب روپے کر دیا گیا تھا جس سے تعلیمی اداروں اور اسٹیک ہولڈرز میں تشویش کی لہر دوڑ گئی تھی۔

بجٹ میں نمایاں کمی نے ملک بھر میں اعلیٰ تعلیم اور ترقیاتی پروگراموں کے مستقبل کے بارے میں خطرے کی گھنٹی بجا دی تھی۔

ترقیاتی بجٹ کو وزیر اعظم، وزیر خزانہ اور تعلیم و منصوبہ بندی کے چیئرمین کی کوششوں سے بحال کیا گیا ہے۔

ایچ ای سی کے چیئرمین نے تمام وزرائے اعلیٰ، وزیر اعظم اور دیگر اہم اسٹیک ہولڈرز سے بجٹ میں کٹوتی کو تبدیل کرنے میں تعاون کرنے پر شکریہ ادا کیا۔

You May Also Like